کمشنر اور ڈپٹی کمشنر کوئٹہ نے اسٹیشن کمانڈر کوئٹہ کینٹ کے ساتھ ملاقات کی

کوئٹہ: بلوچستان ہائی کورٹ کے جج جناب جسٹس جمال خان مندوخیل اورجناب جسٹس محمد اعجاز سواتی پر مشتمل بنچ نے اراضی سے متعلق آئینی عرضداشت نمبر205/2015 CC19350 کی سماعت کے دوران بتایا کہ بائی پاس روڈ کوئٹہ پر نواں کلی سے متصل علاقے میں کینٹ کی حدود کی توسیع کو چیلنج کیا گیا ہے۔ اے اے جی نے مقدمہ کی سماعت کے دوران بتایا کہ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر کوئٹہ نے اسٹیشن کمانڈر کوئٹہ کینٹ کے ساتھ ملاقات کی ہے اور انہیں قانونی پوزیشن سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ قوانین کے مطابق زمین کے باقاعدہ حصول کے بغیر کسی شخص کو مذکورہ زمین بروئے کار لانے یا وہاں تعمیراتی کام کرنے سے روکا نہیں جاسکتا نہ ہی قانونی طور پر وہاں تعمیر کئے گئے ڈھانچے کو منہدم کیا جاسکتا ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے بتایا کہ متعلقہ حکام نے بات چیت کے بعد جی ایچ کیو حکام سے رابطہ کرنے کے لئے وقت مانگا ہے۔ انفرادی حقوق کو حاصل قانونی تحفظ کے پیش نظر عدالت نے توقع ظاہر کی کہ کسی سرکاری محکمہ کی جانب سے کوئی غیرقانونی اقدام نہیں کیا جائے گا۔ درخواست گزاروں کے مؤقف کو درست قراردیتے ہوئے مقدمے کی اگلی سماعت کیلئے 14مئی 2015ء کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔