جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا

کوئٹہ: جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا کہ پاک چین کوریڈور کو کسی صورت متنازعہ نہ بنایا جائے ۔اصل روٹ پر کا م شروع کرنا سب کے فائدے میں ہے پہلے سے ترقی یافتہ علاقوں کے بجائے معاشی طور پر کمزورعلاقوں پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔پسماندہ علاقوں کی قسمت میں اگر ترقی آئی ہے تو اس سے موڑنا کسی صورت درست نہیں۔ایک صوبے کو ترقی دینے کیلئے دوصوبوں کو ناراض وپسماندہ رکھنا دانشمندی نہیں۔رابطہ عوام مہم میں عوام کا جوق درجو ق جماعت اسلامی میں شمولیت خوش آئند ہے۔رابطہ عوام مہم اور ممبرسازی اہداف کے حصول تک جاری رہیگی ۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی کے صوبائی سیکرٹریٹ کوئٹہ میں نو منتخب صوبائی مجلس شوریٰ اجلاس اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی اجلاس میں امیر صوبہ عبدالمتین اخوندزادہ ، مولانا عبدالحق ہاشمی ، شیخ امین اللہ کاکڑ، مولانا ہدایت الرحمان بلوچ ،ڈاکٹر محمد ابراہیم،بشیر احمدماندائی وصوبہ بھر سے منتخب ہونے والے اراکین شوریٰ اور امرائے اضلاع شریک ہوئے ۔اجلاس میں نومنتخب اراکین نے حلفِ رکنیت اُٹھایاجبکہ جب کے امرائے اضلاع نے رابطہ عوام مہم کی رپورٹ پیش کی گئی اور مہم کی رپورٹ تسلی بخش پاتے ہوئے مہم کو مزید کچھ عرصہ جاری رکھنے کا فیصلہ کرتے ہوئے سو فیصداہداف کے حصول کی ہدایت کی گئی ۔ صوبائی شوریٰ نے مجلس عاملہ ،سیاسی ،منصوبہ ،دعوتی ،تربیتی ودیگر کمیٹیاں بھی تشکیل دیں۔صوبائی شوریٰ نے گوادر ،کاشغر روٹ، کراچی کی صورتحال پرسمیت صوبے کی سیاسی علاقائی صورتحال کاجائزہ لیا ۔شوریٰ نے بنگلہ دیشن ،مصر ودیگر مسلم ممالک میں اسلامی تحریکوں کے قائدین کو پابند سلاسل کرنا ،تحریکوں پر مظالم کی شدید مذمت کی ۔اس موقع پر صوبے کی سیاسی صورتحال ودیگر مسائل پر قراردادیں بھی پیش کی گئی ۔
شوریٰ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے مزید کہاکہ بلوچستان جغرافیائی ،محل وقوع ،عالمی سیاست اور خزانوں ومعدنیات کی وجہ سے اہمیت کا حامل صوبہ ہے حکومتی اور اسٹیبلشمنٹ کی غلطیوں کی وجہ سے بلوچستان کے عوام کو سزامل رہی ہے سب خطرات ،سازشوں کے باوجود جماعت اسلامی بہتر حکمت عملی کیساتھ یہاں کے عوام کی فلاح بہبود ،خیر خواہی ،معاشی سیاست حقوق کے حصول کیلئے جدوجہد کر رہی ہے۔ خواتین آبادی کا نصب اور نوجوان بھی آبادی کا آدھ یعنی نو کروڑنوجوان ہیں ۔خواتین ونوجوانوں میں کام کرنے کی ضرورت ہے جماعت اسلامی زندہ وفعال تحریکوں کی طرح منصوبہ بندی کیساتھ جدوجہد کر رہی ہے۔عالمی سطح پر اسلامی تحریکوں کا راستہ روکھاجارہا ہے مصر ترکی ودیگر برادر اسلامی تحریکوں میں اسلامی تحریکیں فعال ہورہی ہیں۔دنیا بھر میں انتخابات میں کامیابی کے باوجود اسلامی تحریکوں کا راستہ روکھا قائدین کو پابند سلاسل اور قید وبند کرکے پابندیاں لگائی جارہی ہیں۔عالم اسلام کو تقسیم کرکے ان کے وسائل پرقبضہ اور انہیں ناکامی سے دوچار کیاجارہاہے۔حرم پاک حرمین شریفین عالم اسلام کے مرکز ومحورہے ان کی تحفظ کیلئے سب کا یکساں موقف ہے ۔یمن کے مسئلے پر پارلیمنٹ کی مشترکہ قرارداد پر عمل کی ضرورت ہے ۔ملک کا وزیر خارجہ نہ ہونے کی وجہ سے مسائل بڑھ رہے ہیں ۔
اجلاس سے جماعت اسلامی کے صوبائی امیر عبدالمتین اخوندزادہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی اقامت دین کی اسلامی تحریک ہے خیر خواہی کی بنیاد پر عوام کے مسائل کے حل ،اسلامی پاکستان بناکر خوشحال بلوچستان کی راہ ہموار کر رہے ہیں جماعت اسلامی میں ذاتیات کی بجائے حقائق ،اخلاص وضمیر کی بنیاد پر مشاورت ہوتی ہے پاکستان کو اسلامی بنانے، خیر خواہی ،دین کی اشاعت ،برائیوں ومنکرات کے خاتمے ،اسلامی حکومت کے قیام اورجماعت اسلامی کے افرادی قوت میں اضافے کیلئے جدوجہد جاری ہے خرابی پر محض اڑے رہناصحیح نہیں۔انسانوں سے رابطے کیلئے وژن پیدا کی جائے ۔جماعت اسلامی اللہ کے دین پر قائم جماعت ہے۔ دعوت کو ہر آدمی تک پہنچانا ضروری ہے جماعت اسلامی صوبے کے تما م علاقوں میں کام کرنے والی واحد جماعت ہے ۔دعوت کے کام کو محض خواہشات تک محدود نہ رکھا جائے بلکہ مقصد کے حصول کیلئے جدوجہد کی جائے